. پچھلی حکومتوں نے اداروں کو گروی رکھ کر ملک کا ستیاناس کر دیا ،فواد چوہدری - Today Pakistan
Home / اہم خبریں / پچھلی حکومتوں نے اداروں کو گروی رکھ کر ملک کا ستیاناس کر دیا ،فواد چوہدری

پچھلی حکومتوں نے اداروں کو گروی رکھ کر ملک کا ستیاناس کر دیا ،فواد چوہدری

پی ٹی آئی کی تحریک بالکل مڈل کلاس کی تحریک تھی، حکومت میں آ کر دیکھا ہم قرضوں کے سود میں دبے ہوئے ہیں
اسلام آباد(ٹوڈے پاکستان نیوز)وزیراطلاعات و نشریات فواد حسین چوہدری نے کہا ہے کہ پاکستان اس وقت صحیح سمت پر چل رہا ہے، بیر وزگاری کے خاتمے اور وسائل کی تلاش کے لئے نئی حکمت عملی پر عمل پیرا ہیں انہوں نے کہا کہ ملک میں ترقیاتی کاموں کے لئے چین اور سعودی عرب کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں معروف صحافی عالیہ شاہ کی کتاب کی تقریب رونمائی سے خطاب کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کی تحریک بالکل مڈل کلاس کی تحریک تھی جس طرح ذولفقار علی بھٹو کی تحریک تھی ملک میں جس طرع کا نظام 1988 سے رہا اس میں سب سے زیادہ مڈل کلاس کو نقصان پہنچا عمران خان نے پاکستان کو نیا شعور دیا جس وجہ سے وہ پاکستان میں سب سے مضبوط لیڈر کے طور پر سامنے آئے اور 126 دن کے دھرنے میں ہی نئے پاکستان کی بنیاد رکھی گئی انہوں نے کہا کہ ہم نے حکومت میں آ کر دیکھا کہ ہم قرضوں کے سود میں دبے ہوئے ہیں یہی وجہ ہے کہ زرداری اور نواز شریف اس وقت اپنی مقبولیت کھو بیٹھے ہیں ہماری پاس اس وقت معاشی مسائل بہت ہیں پچھلی حکومتوں نے اداروں کو گروی رکھ کر ملک کا ستیاناس کر دیا ،زرداری نے 2 ہزار ارب روپے سندھ ڈویلپمنٹ خرچ کیا جبکہ 6 ارب روپے چوری کئے گئے پنجاب میں بھی یہی حالات ہیں ہم نے بلوں میں غریبوں کو بچا لیا ہے، مڈل کلاس کے لوگ پریشان ہیں میڈیا پر پچھلے ادوار میں اربوںروپے خرچ کئے گئے لیکن کوئی پتہ نہیں کہاں خرچ ہوئے ہم نے سب کےلئے احتساب کا نظام شروع کیا ہے جس کی مثال ہے کہ ہمارے وزراءکو گرفتار کیا گیا اور انہوں نے اپنے عہدوں سے استعفیٰ بھی دے دیا اس وقت حالات یہ ہیں کہ ہماری جیلوں میں مرغی چوری کرنے والا شخص قیدو بند کی صعوبتیں کاٹ رہا ہے اور اربوں روپے چوری کرنے والے باپ بیٹی ضمانت پر رہا ہو گئے ہیں ہم اس نظام کو بدلیں گے انہوں نے کہا کہ صحافیوں کے موجودہ دور میں درپیش مسائل پر ہماری گہری نظر ہے کسی سے زیادتی نہیں ہو گی ویج بورڈ ایوارڈ نافذ کیا جائے گا اداروں کو کہا گیا ہے کہ وہ میڈیا ورکرز کے ساتھ بدسلوکی سے گریز کریں ورنہ اشتہارات کی بندش سمیت اکاونٹس منجمند کئے جا سکتے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے