. علاج کے نام پر نواز شریف کی تضحیک برداشت نہیں ،رحم کی بھیک نہیں چاہیے ‘ مریم نواز - Today Pakistan
Home / اہم خبریں / علاج کے نام پر نواز شریف کی تضحیک برداشت نہیں ،رحم کی بھیک نہیں چاہیے ‘ مریم نواز

علاج کے نام پر نواز شریف کی تضحیک برداشت نہیں ،رحم کی بھیک نہیں چاہیے ‘ مریم نواز

سب کو معلوم ہے نواز شریف دل کے عارضہ میں مبتلا ہیں لیکن انہیں پانچ روز تک اس ہسپتال میں رکھا گیا جہاں کارڈیک یونٹ ہی نہیں

لاہور (ٹوڈے پاکستان نیوز)پاکستان مسلم لیگ (ن ) کی مرکزی رہنما مریم نواز نے کہا ہے کہ اگر حکومت نے علاج کے نام پر نواز شریف کی تضحیک کرنی ہے تو ہمیں یہ برداشت نہیں اور ہمیں رحم کی بھیک نہیں چاہیے ،سب کو معلوم ہے کہ نواز شریف دل کے عارضہ میں مبتلا ہیں لیکن انہیں پانچ روز تک اس ہسپتال میں رکھا گیا جہاں کارڈیک یونٹ ہی نہیں ،مسلم لیگ (ن) متحدہے اور رہے گی ۔ سروسز ہسپتال سے روانگی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ نواز شریف کی صحت ایک سنجیدہ مسئلہ ہے لیکن انہیں کبھی ایک اور کبھی دوسرے ہسپتال لے جایا گیا ۔جو بھی بورڈز بنائے گئے وہ حکومت نے خود تشکیل دئیے اس میں ہمارا کوئی بندہ شامل نہیں تھا ، چاروں بورڈز نے تجویز کیا کہ نواز شریف کو دل کا عارضہ لا حق ہے اس لئے امراض قلب کے ہسپتال میں لے جایا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کا بنیادی مسئلہ دل کا عارضہ ہے لیکن انہیں چار روز تک سروسز ہسپتال میں رکھا گیا،اس پر نواز شریف نے کہا کہ آپ کا رویہ غیر سنجیدہ ہے اس لئے مجھے واپس جیل لے جائیں اور وہ جیل چلے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پہلے نواز شریف کو جیل سے پی آئی سی لایا گیا پھر پی آئی سی سے جیل واپس لے جایا گیا اور پھر سروسز ہسپتال لے آئے اور اب انہیں کہا جارہا ہے کہ آپ پی آئی سی چلے جائیں۔ انہیں اچھی طرح معلوم ہے کہ نواز شریف کو دل کا عارضہ ہے لیکن کبھی ایک ہسپتال اورکبھی دوسرے ہسپتال لیجایا جاتا ہے، اگر اس کے ذریعے نواز شریف کی تضحیک مقصود تھی تو ہم اس کا نشانہ بننے کے لئے تیار نہیں ،ہمیں حکومت سے رحم کی بھیک نہیں چاہیے ۔ ہم دوسروں کی طرح سہولیات لینے نہیں بیٹھے ۔انہوں نے کہا کہ ایک تو نواز شریف کو دل کا پرانا مرض لا حق ہے اور اب مزید نئی علامات ظاہر ہو رہی ہیں اور انہیں اسی وجہ سے تکلیف ہے ۔ اس کے باوجود کسی کی صحت کے ساتھ اس قسم کاکھلواڑ کرنا اور وہ بھی ایسے انسان کے ساتھ جو تین مرتبہ اس ملک کا وزیر اعظم منتخب ہوا ہے اور اس کی ملک کے خدمات ہوں اور پورے ملک میں اس کے چاہنے والوں ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو کیوں سروسز ہسپتال میں رکھا گیا جہاں کارڈیک سنٹر ہی نہیں ، میڈیکل بورڈ پانچ روز تک کیا کرتا رہا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف تو جیل سے آنا ہی نہیں چاہتے تھے یہ انہیں خود اصرار کر کے لے کر آئے ۔حکومت سے نہ کبھی علاج کی درخواست کی نہ کریں گے ۔ انہوں نے اس ساری صورتحال ابہام پیدا کرنے کے سوال کے جواب میں کہا کہ اس کے پیچھے حکومتی کارندے ہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ خوف خدا سے عاری لوگوں جو اب حکومت میں ہیں نے بستر مرگ پر میری مرحومہ والدہ کا مذاق اڑایا تھا ، ظلم کی راہ چھوٹی مگر اس کی پکڑ بہت بڑی ہے ۔مریم نواز نے کہا کہ میں نے چپ رہ کر سب کچھ سہا ہے اور مانگا تو صرف اللہ سے ،کسی چیز پر سیاست نہیں کی مگر اب اگر میرے والد کی صحت سے کھلواڑ کیا گیا یا اس کو سیاست کی نظر کیا گیا یا ان کو خدانخواستہ کوئی نقصان پہنچا تو اس کی ذمے داری حکومت پر ہو گی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے