. پی بی 17 میں انگھوٹوں کی تصدیق سے متعلق کیس ، یار محمد رند اور الیکشن کمیشن کو نوٹس - Today Pakistan
Home / بلوچستان / پی بی 17 میں انگھوٹوں کی تصدیق سے متعلق کیس ، یار محمد رند اور الیکشن کمیشن کو نوٹس

پی بی 17 میں انگھوٹوں کی تصدیق سے متعلق کیس ، یار محمد رند اور الیکشن کمیشن کو نوٹس

درخواستوں میں کسی دھاندلی کرنے والے کانام نہیں ،کیا جن بھوت آکر دھاندلی کرگئے، ریمارکس

اسلام آباد ۔سپریم کورٹ میں یار محمد رند کے حلقے پی بی 17 میں انگھوٹوں کی تصدیق سے متعلق درخواست پر سماعت کے دور ان یار محمد رند او ر الیکشن کمیشن کو نوٹسز جاری کر دیئے ہیں ۔ جمعرات کو کیس کی سماعت سپریم کورٹ میں ہوئی ۔ سماعت کے دور ان وکیل درخواست گزار نے کہاکہ شوران میں دھاندلی کی گئی اور اس سلسلے میں 12 پولنگ ایجنٹس کے بیانات ریکارڈ ہوئے۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ کسی شخص کا نام نہیں لیا گیا کہ فلاں شخص نے فلاں جگہ دھاندلی کی۔ جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ آپ کو ان لوگوں کی نشاندھی کرنی تھی جو دھاندلی میں ملوث تھے۔ جسٹس فیصل عرب نے کہاکہ آپ کو واقعہ بتانا تھا۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ درخواستوں میں کسی دھاندلی کرنے والے کانام نہیں ۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ کیا جن بھوت آکر دھاندلی کرگئے۔ وکیل درخواست گزار نے کہا کہ جو لوگ پکڑے گئے انہوں نے بیان دیا کہ وہ یار محمد رند کے پولنگ ایجنٹس ہیں۔وکیل درخواست گزار نے کہاکہ 13 پولنگ سٹیشن کی حد تک یار محمد رند نے خود مانا کہ دھاندلی ہوئی ہے۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ انہوں نے دھاندلی کا الزام آپ پر لگایا ہے۔ وکیل درخواست گزارنے کہا کہ تمام بیان حلفی میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ مسلح افراد نے داخلے سے روکا۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ تمام 11 بیان حلفی آپ میں مماثلت رکھتے ہیں، تمام 11 لوگوں نے ایک ہی بیان دیا۔ جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ کیا سب پولنگ اسٹیشنز پر ایک ہی طریقے سے دھاندلی ہوئی۔جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ دھاندلی کے الزام کو ثبوتوں کے ساتھ ثابت کرنا ہوتا ہے۔ وکیل درخواست گزار نے کہاکہ مسترد کیے گئے ووٹوں کی تعداد جیت کے فرق سے زیادہ ہے۔وکیل درخواست گزار نے کہا کہ 2136 ووٹ مسترد ہوئے جبکہ 1535 ووٹ سے یار محمد رند جیتے۔ جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ کیا اتنی آسانی سے کامیاب امیدوار کو فارغ کردیں۔ وکیل درخواست گزار نے کہا کہ ایک پولنگ سٹیشن پر دھاندلی کی ایف آئی آر ایف سی نے کٹوائی۔ وکیل درخواست گزار نے کہا کہ دھاندلی کے الزام پر الیکشن کے دن دو درخواستیں دائر کیں۔ دلائل سننے کے بعد عدالت عظمیٰ نے درخواست پر یار محمد رند اور الیکشن کمیشن کو نوٹسز جاری کرتے ہوئے سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے