. یکجہتی کشمیر ، اسلام آباد میں تقریب وزرائ، شہریوں، طلبا و طالبات کی بڑی تعداد کی شرکت - Today Pakistan
Home / اہم خبریں / یکجہتی کشمیر ، اسلام آباد میں تقریب وزرائ، شہریوں، طلبا و طالبات کی بڑی تعداد کی شرکت

یکجہتی کشمیر ، اسلام آباد میں تقریب وزرائ، شہریوں، طلبا و طالبات کی بڑی تعداد کی شرکت

کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے سائرن بجایا گیا، شرکا کی ایک منٹ کی خاموشی

اسلام آباد(ٹوڈے پاکستان نیوز)یوم اظہار یکجہتی کشمیر کے سلسلے میںوفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ڈی چوک پر تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں وفاقی وزیر امور کشمیر و گلگت علی امین گنڈا پور سمیت تقریب میں شہریوں، طلبا و طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ تقریب میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیلئے سائرن بجایا گیا، شرکا نے ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی۔ اس موقع پر انسانی ہاتھوں کی زنجیر بنا کر کشمیریوں سے یکجہتی کا اظہار کیا گیا ۔تقریب میں قومی ترانہ اور کشمیری نغمے چلائے گئے۔وفاقی وزیر امور کشمیر نے کشمیریوں شہدا کی یاد میں یاد گار شہدا تعمیر کرنے کی نقاب کشاءکی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور نے کہا کہ پوری پاکستانی قوم کشمیری بھائیوں سے بھرپور یکجہتی کا اظہار کر رہی ہے ۔علی امین گنڈاپور نے کہا کہ ہاتھوں کی زنجیر میں عوام کی کثیر تعداد میں شرکت کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کا مظہر ہے ۔علی امین گنڈاپور نے کہا کہ کشمیریوں کی قربانیوں اور پاکستان سے کشمیریوں کی وابستگی کو سلام پیش کرتے ہیں ۔ علی امین گنڈاپور نے کہاکہ کشمیریوں کی سیاسی ، سفارتی و اخلاقی حمایت جاری رکھیں گے ۔ علی امین گنڈاپور نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل سے متعلق عالمی برداری کی بے حسی افسوس ناک ہے ۔علی امین گنڈاپور نے کہاکہ مقبوضہ کشمیر کے نہتے عوام بھارتی مظالم کا ڈٹ کر مقابلہ کر رہے ہیں ۔علی امین گنڈاپور نے کہاکہ بھارت اسرائیل طرز پر مقبوضہ کشمیر کی ڈیموگرافی تبدیل کرنے کی سازشیں کر رہا ہے ۔علی امین گنڈاپور نے کہا کہ ہیومن رائٹس کمیشن کی رپورٹ کی روشنی میں مقبوضہ کشمیر میں انکوائری کمیشن بھجا جائے ۔علی امین گنڈاپور نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے عالمی برادری اپنا کردار ادا کرے ۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے علی امین گنڈا پور نے کہا کہ ہم کشمیری عوام کی جدوجہد کو سلام پیش کرتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ انشا اللہ بہت جلد کشمیریوں کو ان کا حق ملے گا۔ انہوںنے کہاکہ پاکستانی قوم آزادی کی جدوجہد میں کشمیریوں کے ساتھ ہیں۔ انہوںنے کہاکہ مقبوضہ کشمیر میں ہونے والے مظالم پر عالمی اداروں کی خاموشی سوالیہ نشان ہے۔ انہوںنے کہاکہ بھارتی حکومت کو پیغام دیتے ہیں باز آجائے۔ انہوںنے کہا کہ وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے ہم مذاکرات کیلئے تیار ہیں انہوںنے کہا کہ بھارت مذاکرات کی پیشکش ہماری کمزوری نہ سمجھے،اقوام متحدہ کی رپورٹ کے بعد آگے پیش رفت کریں گے۔ انہوںنے کہا کہ عالمی اداروں میں مظالم کی تحقیقات کیلئے کمیشن کی تشکیل کیلئے کیس کریں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے