. پاکستان ایران سمیت تمام ہمسائیہ ممالک کیساتھ بہتر تعلقات چاہتا ہے ‘قاسم سوری - Today Pakistan
Home / بلوچستان / پاکستان ایران سمیت تمام ہمسائیہ ممالک کیساتھ بہتر تعلقات چاہتا ہے ‘قاسم سوری

پاکستان ایران سمیت تمام ہمسائیہ ممالک کیساتھ بہتر تعلقات چاہتا ہے ‘قاسم سوری

ہماری حکومت نے اقدامات شروع کئے ہیں جسکی ثمرات جلد دونوں ممالک کو مل جائینگے

کوئٹہ:پاکستان ایران سمیت تمام ہمسائیہ ممالک کیساتھ بہتر تعلقات کا خواہاں ہیں ایرا ن ہمارا برادراسلامی ملک ہے وزیر اعظم عمران خان کا وژن ہے کہ ہمسایوں کیساتھ اچھے تعلقات ہو اورتحریک انصاف کی حکومت ہمسایہ ممالک کیساتھ نئے سرے سے تعلقات استوار کرنا چاہ رہے ہیں اس سلسلے میں وزیر اعظم عمران خان ایران کا دورہ بھی کر رہے ہیں ۔یہ بات ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے ایران کے کوئٹہ میں متعین قونصلر جنرل محمد رفعی سے ملاقات کے دوران کہی۔ قاسم سوری نے کہا کہ ایران اور پاکستان کے کافی مسائل مشترک ہے اس کو حل کرنے کی ضرورت ہے ہماری دلی خواہش ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان اچھے تعلقات اور آزاد تجارت ہو اس سلسلے میں ہماری حکومت نے اقدامات شروع کئے ہیں جسکی ثمرات جلد دونوں ممالک کو مل جائینگے۔ ڈپٹی سپیکر نے کہا کہ ایران کے صوبہ سیستان اور صوبہ بلوچستان کے رہنے والوں کی مزاج۔رسم رواج بہت مشترک ہے اسی وجہ سے ہم نہیں چاہتے کہ ان برادر اقوام کے درمیان نفرتیں ہو ہم سب نے بھائی چارے کو فروغ دینا ہے۔ انھوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کا وژن اور عزم ہے کہ یہ خطہ دنیا کی ترقی پذیر خطوں میں شامل ہو بحیثیت وزیراعظم اس کے وژن اور معاشی پالیسی کے حوالے سے اٹھائے گئے اقدامات کا جلد اس ملک کے عوام اور پورے خطے کو فائدہ پہنچ جائیگا۔ انھوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ ایران پاکستان کے درمیان آزاد تجارت ہو سرحد پر کچھ مسائل ضرور ہے اسکو حل کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہماری حکومت پاکستان سے جانے والی زائرین کو مکمل سیکورٹی فراہم کر رہے ہیں پہلے دہشتگردی کے واقعات ہو رہے تھے جس سے دونوں ممالک کو کافی نقصان بھی ہو چکا ہے لیکن آب حالات بہت بہتر ہوئے اورانشاء اللہ آگے بھی بہتر رہے گا۔ اس موقع پر ایرانی قونصلر جنرل نے کہا کہ پاکستان کی نئے حکومت سے کافی امیدیں ہیں کہ وہ پاکستان اور ایران کے درمیان تعلقات کو نئے سرے سے استوار کرینگے اور دونوں ممالک کے درمیان تجارت کو فروغ دینگے انھوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیاں تجارتی حوالے سے پہلے بھی کئی معاہدے ہوئے لیکن بدقسمتی سے آج تک ان پر عملدرآمد صحیح نہیں ہوا۔ انہوںنے کہا کہ پاکستان اور ایران کے درمیان فری بینکنگ ہونے کی ضرورت ہے جس سے دونوں ممالک کے معیشت میں آئے گی۔ انہوںنے کہا کہ بینکنگ کے حوالے سے ایران پر ہونے والے پابندیوں کا کوئی اثر ۔ ایران کے بینک تمام ممالک کے ساتھ ٹرانزکشن کرسکتے ہیں۔ پاکستان بھی اس حوالے سے اقدامات اٹھائے اس سے ہمارے تاجروں کو کافی سہولیات میسر ہوں گے۔ ایرانی قونصل جنرل نے کہا کہ اس سلسلے میں دونوں ممالک کے وفود آپس میں بیٹھے اور اس کا کوئی حل نکالے۔ پاکستان اس سلسلے میں اقدامات اٹھائے۔ ایران کی طرف سے میں ذمہ داری کے ساتھ کہتا ہوں کہ دو ہفتے کے اندر میں اس پر کام کرکے حکومت پاکستان کو نتیجہ دے دوں گا۔ انہوںنے کہا کہ دونوں اسلامی برادر ملک ہے ہمارے آپس میں تجارت کے فروغ کے لئے آزادانہ فیصلوں کی ضرورت ہے۔ انہوںنے کہا کہ ایرانی حکومت بھی یہی خواہش ہے کہ وہ ہمسایوں کے ساتھ اچھے تعلقات استوار کریں۔اس موقع پر ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری نے کہا کہ میں آپ کی بات وزیراعظم عمران خان اور وزیر خزانہ اسد عمر تک پہنچادوں گا۔ ہماری حکومت کی خواہش ہے کہ ہم برادر اسلامی ممالک کے ساتھ تجارت کو فروغ دیں اور تجارت کے حوالے سے ہمسایہ ممالک کے ساتھ درپیش مشکلات کو حل کریں جس پر کافی حد تک کام بھی ہوچکا ہے۔ اس سے قبل ایرانی قونصل جنرل نے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری سے ان کی والدہ کی وفات پر فاتحہ خوانی بھی کی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے