. وزیر اعظم پی پی ،(ن) کی جانب سے کرپشن کا پیسہ واپس دینے کی افواہوں پر قوم کو اعتماد میں لیں‘ شیخ رسید - Today Pakistan
Home / اہم خبریں / وزیر اعظم پی پی ،(ن) کی جانب سے کرپشن کا پیسہ واپس دینے کی افواہوں پر قوم کو اعتماد میں لیں‘ شیخ رسید

وزیر اعظم پی پی ،(ن) کی جانب سے کرپشن کا پیسہ واپس دینے کی افواہوں پر قوم کو اعتماد میں لیں‘ شیخ رسید

لانگ مارچ اور لونگ گواچے میں فرق ہے ، بلاول بھٹو کرپشن کے خلاف لانگ مارچ کرنے نکلیں میں ہاتھوںمیں ہاتھ ڈال کر ساتھ دوںگا

لاہور: وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان سے درخواست ہے کہ پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کی جانب سے لوٹ مار اور کرپشن کا پیسہ واپس دینے کی افواہوں پر قوم کو اعتماد میں لیں ، مفت کی ڈیل اور ڈھیل قبول نہیں ، شریف برادران نے تو اسامہ بن لادن کا مال بھی نہیں چھوڑا ، آرمی چیف سے اپیل ہے کہ شہباز شریف کی سکیورٹی پرتعینات رینجرز کی گاڑیاں ہٹائی جائیں ، سپیکر قومی اسمبلی رانا ثنا اللہ اور سعد رفیق کو فی الفور پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کا ممبر بنائیں ،لانگ مارچ اور لونگ گواچے میں فرق ہے ، بلاول بھٹو کرپشن کے خلاف لانگ مارچ کرنے نکلیں میں ہاتھوںمیں ہاتھ ڈال کر ساتھ دوںگا،وزیر اعظم 12فروری کو تھل ایکسپریس کا افتتاح کریںگے جبکہ پہلی وی آئی پی ٹرین کے افتتاح کے لئے 30مارچ کی تاریخ فائنل کی گئی ہے ۔ بیماری کی بنیادی وجہ ڈیل سے ناکامی کے بعد ڈھیل کی طرف سفر ہے اور ڈیل اور یہ ڈھیل کو اپنا حق سمجھتے ہیں ، یہ بزنس مین سیاستدان ہیں او رانہیں ڈیل کرنے کا طریقہ آتا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ شہباز شریف پہلی مرتبہ قومی اسمبلی میں منہ اٹھا کر آرہا ہے اورمیں آٹھ مرتبہ کا تجربہ ہے ، اس کی پٹواری اور تھانیدار لگانے اور بیورو کریٹس کے گھر وںمیں داخل ہونے کے سوا کیا اہلیت ہے ،تجربے کے لحاظ سے ان کا میرے ساتھ کوئی موازنہ نہیں،مجھے رولز اینڈ پروسیجر زبانی یاد ہیں ،آپ تو پہلی مرتبہ منسٹر انکلو میں آئے ہیں ،یہ جیلوں میں نہیں بلکہ ہالیڈے پر ہیں اورسنوفال انجوائے کر رہے ہیں۔میں سپیکر سے درخواست کرتا ہوں کہ رانا ثنا اللہ خان اور خواجہ سعدرفیق کو فی الفور پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں لیا جائے ۔ شہباز شریف صرف سپیکر کو یہ کہنے گئے تھے کہ آپ کو واسطہ ہے شیخ رشید کو پی اے سی میں نہ لایا جائے ، اب انشا اللہ دو پی اے سیز ہوں گی ،پی ٹی آئی نے ریاض فتیانہ کی جگہ میرا نام دیدیا ہے ۔ اگر اللہ راستہ نہ روکے تو میرے ممبر بننے میں کوئی رکاوٹ نہیں لیکن معلوم نہیں سپیکر کیوں تاخیر کر رہے ہیں ،میں اس وقت فل فارم میں ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کے پاس چیئرمین پبلک اکاﺅنٹس بننے کا کوئی اخلاقی جواز نہیں اور یہ غیر اخلاقی طور پر بیٹھے ہیں اگر ان میں ذرا سی بھی اخلاقی جرات ہو تو اس عہدے کو چھوڑ دیں ۔ انہوںنے عمران خان کی جانب سے شہباز شریف کو پی اے سی کا چیئرمین بنانے کے سوال کے جواب میں کہا کہ میں سب کے سامنے کہہ رہا ہوں کہ عمران خان نے بہت بڑا ”بلنڈر “ کیا ہے ۔ انہوںنے کہا کہ سنا ہے کہ بلاول صاحب لانگ مارچ کرنے جارہے ہیں ، لانگ مارچ اور لونگ گواچے میں فرق ہے ،یہ کرپشن کے خلاف لانگ مارچ کریں میں ان کے ہاتھوںمیں ہاتھ ڈال کر نکلوں گا ۔ آصف زرداری نے تو فالودے والے اور مردوں کوبھی نہیں بخشا ، لیکن میں زرداری کو ایک کریڈٹ دوں گا کہ وہ نواز شریف کی طرح بزدل نہیں لیکن وہ چور ان جیسا ہی بڑاہے ۔ انہوںنے کہا کہ نواز شریف اور شہباز شریف کو دولت ٹھکانے لگانے کا ہنر آتا ہے جبکہ زرداری کو صرف گول گپے ، فالودے والا ہی ملا ، آصف زرداری نے تو مرے ہوئے کے اکاﺅنٹ سے دو ارب روپے باہر بھجوائے لیکن آج یہ لوگ جمہوریت کے چمپئن بن رہے ہیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے