. دودھ کی رکھوالی ہر بلے کو نہیں لگایا جا سکتا،شہبازشریف کو ڈھیل نہےں ملے گی‘شیخ رشید - Today Pakistan
Home / پاکستان / دودھ کی رکھوالی ہر بلے کو نہیں لگایا جا سکتا،شہبازشریف کو ڈھیل نہےں ملے گی‘شیخ رشید

دودھ کی رکھوالی ہر بلے کو نہیں لگایا جا سکتا،شہبازشریف کو ڈھیل نہےں ملے گی‘شیخ رشید

پروڈکشن آرڈر پر پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں نہیں جایا جا سکتا ، 23 مارچ میں پاکستان ریلوے میں ایک بڑی تبدیلی دیکھیں گے

راولپنڈی (ٹوڈے پاکستان نیوز)وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کہاہے کہ شہباز شریف کو پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی کا چیئر مین بنانے پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہاہے کہ دودھ کی رکھوالی ہر بلے کو نہیں لگایا جا سکتا،پروڈکشن آرڈر پر پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں نہیں جایا جا سکتا،یہ عمران خان سے ڈھیل مانگ رہے ہیں جو نہیں ملے گی،آئی ایم ایف کے پاس جانا مجبوری ہے،نالہ لئی پر وزیراعلیٰ نے احکامات صادر دے دئیے یکم مارچ کو افتتاح کر دیا جائےگا، 23 مارچ میں پاکستان ریلوے میں ایک بڑی تبدیلی دیکھیں گے۔ جمعہ کو وزیر ریلوے شیخ رشید احمد نے کلین، گرین اور خوش اخلاق ریلوے مہم کا افتتاح کرتے ہوئے کہاکہ ایک ماہ کی مہم چلا رہے ہیں ،کوشش کروں گا اس کا دھیان رکھ سکوں۔انہوںنے کہاکہ نالہ لئی پر وزیراعلیٰ نے احکامات صادر فرما دئے ہیں،یکم مارچ کو اس کا افتتاح کر دیا جائے گا۔ وزیر ریلوے نے کہاکہ ریلوے میں شکایت سیل بنا دیا ہے۔ انہوںنے کہاکہ تھل ایکسپریس شروع کرنے لگے ہیں، یہ راولپنڈی سے ملتان تک جائےگی۔ شیخ رشید احمد نے کہاکہ جناح ایکسپریس پاکستان کی گرین لائن کے بعد فاسٹ ٹرینوں کا آغاز کرنے جا رہے ہیں۔ انہو ںنے کہاکہ میں نواب، شاہ، خیر پور سب کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔انہوںنے کہاکہ بیس نئی ٹرینوں کی گنجائش ایک سو سے تجاوز کر چکی ہے۔ وزیرریلوے نے کہاکہ انشاءاللہ 23 مارچ میں پاکستان ریلوے میں ایک بڑی تبدیلی دیکھیں گے۔انہوںنے کہاکہ شکایات سیل اسلام آباد میں بنایا گیا ہے جسکی نگرانی خود کر رہا ہوں،میں نہیں چاہتا بغیر ٹکٹ کے لوگ جیل میں جائیں۔ انہوںنے کہاکہ میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے بھی جاونگا۔ انہو ںنے کہاکہ مجھے معلوم ہے شہباز شریف گزشتہ روز سپیکر کو کیوں ملنے گئے،میں پبلک اکاﺅنٹ کمیٹی میں شکایت کرنے نہیں جا رہا۔ انہوںنے کہاکہ دودھ کی رکھوالی ہر بلے کو نہیں لگایا جا سکتا۔انہوںنے کہاکہ میں سپریم کورٹ بھی جاﺅنگا، ایک شیخ رشید کی اور ایک شہباز شریف کی کمیٹی ہو گی۔ انہوںنے کہاکہ مجھے امید ہے کہ آئندہ میرا نوٹیفکیشن جاری کیا جائیگا جس ہر عمران خان کا مشکور ہوں۔ انہوںنے کہاکہ پروڈکشن آرڈر پر پبلک اکاﺅنٹس کمیٹی میں نہیں جایا جا سکتا۔انہوںنے کہاکہ یہ ٹوپی ڈرامہ ہے جسے شیخ رشید ایکسپوز کرتا ہے۔ انہوںنے کہاکہ ملزم کیسے پبلک اکاو¿نٹ کمیٹی میں جا سکتا ہے۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ اور ملازمین کو اے گریڈ دےکر جاﺅنگا۔ ایک سوال پر انہوںنے کہاکہ بزدل لوگ ہیں کہتے ہیں پبلک اکاونٹ کمیٹی میں شیخ رشید پیش نہ ہو۔ انہوںنے پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن)کی قیادت پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہاکہ عمران خان سے ڈھیل مانگ رہے ہیں جو نہیں ملے گی انہوںنے کہاکہ میں عمران خان کے ساتھ سایہ بن کر ہوں۔انہوںنے کہاکہ دو بڑے خاندان ہیں نوازشریف اور زرداری ڈاکو لٹیرے ہیں،سینہ چیر کر بتانا چاہتا ہوں ڈاکوﺅں نے شب خون مارا ہے،آئی ایم ایف کے پاس جانا مجبوری ہے۔ انہوںنے کہاکہ اسپیکر صاحب سب سن رہے ہونگے، ان لوگوں کی جیل جانے سے جان جاتی ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے