. کوئٹہ میں گیس پریشر کی کمی ، حکومت اقدامات کرے - Today Pakistan
Home / اداریہ / کوئٹہ میں گیس پریشر کی کمی ، حکومت اقدامات کرے

کوئٹہ میں گیس پریشر کی کمی ، حکومت اقدامات کرے

صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں سردی کا موسم شروع ہوتے ہی گیس پریشر میں کمی اور گیس کی اچانک لوڈشیڈنگ کی وجہ سے عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ گیس پریشر میں کمی کیخلاف مختلف عوامی تنظیموں کی جانب سے احتجاجی مظاہرے بھی کئے جاتے ہیں لیکن مسئلہ حل ہونے کا نام ہی نہیں لے پارہا ۔ گزشتہ روز صوبائی اسمبلی کے اجلاس کے دوران بھی گیس کی قیمت کے حوالے سے بات کی گئی ۔حکومت اور اپوزیشن اراکین کی جانب سے مشترکہ قرارداد پیش کی گئی مشترکہ قرارداد بی این پی کے میر محمد اکبر مینگل نے پیش کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان گزشتہ کئی سالوں خشک سالی سے متاثر رہاہے جس کی وجہ سے صوبے کے عوام معاشی ابتری کا شکار ہے حالیہ سرد موسم کی وجہ سے گریلو صارفین اپنی ضروریات پوری کرنے کیلئے سوئی گیس کا استعمال نسبتاً موسم گرما سے زیادہ استعمال کرتے ہیں جس کی وجہ سے سوئی سدرن گیس کی سیل پرائس کی وجہ 10000 سے 15000روپے ماہانہ بل ادا کرنے پڑھتے ہیں جو کہ غریب عوام کے دسترس سے باہر ہے لہذا ایوان صوبائی حکومت سے سفارش کرتا ہے کہ وہ وفاقی حکومت سے رجوع کرے کہ بلوچستان کے گھریلوں صارفین کو سیل پرائس فارمولے سے مستثنیٰ قرار دے کر موسم سرما کے لئے گھریلو صارفین کے بل کی ایک مخصوص حد مقرر کی جائے تاکہ صوبہ کے غریب عوام میں پائی جانے والی بے چینی اور احساس محرومی کا خاتمہ ممکن ہوسکے بعدازیں ایوان میں رائے سے اسپیکر بلوچستان اسمبلی نے مشترکہ قرار داد کی منظوردیدی۔
حکومت اور اپوزیشن کی جانب سے مشترکہ طور پر اس اہم مسئلہ پر مشترکہ قرار داد پیش کرنا اور اس کی منظوری احسن اقدام ہے ۔اگر وفاق بلوچستان کے گھریلوں صارفین کو سیل پرائس فارمولے سے مستثنیٰ قرار دے کر موسم سرما کے لئے گھریلو صارفین کے بل کی ایک مخصوص حد مقررکردےتا ہے تو یہ تمام جماعتوں کی مشترکہ کامیابی ہوگی اور اس سے گڈ گورننس کا تاثر مزید بہتر اور عوام کا حکومت پر اعتماد بھی زیادہ بہتر ہوگا ۔گیس قیمت میں کمی کے علاوہ گیس پریشر کا مسئلہ بھی انتہائی اہم ہے اس کےلئے بھی وفاقی حکومت سے بات کرنےکی ضرورت ہے کیونکہ شہر کے اکثر علاقوں میں شدید سردی کے دوران گیس پریشر ختم ہونے کی وجہ سے اکثر لوگ غےرقانونی طور پر کمپریسر کا استعمال کرتے ہیں جس کی وجہ سے اکثر حادثات رونما ہوتے رہتے ہیں اس لئے حکومت کو چاہئے کہ اس اہم مسئلہ کا بھی نوٹس لیتے ہوئے اقدامات کئے جائےں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے