کامیابی کا مطلب یہ نہیں کھلی چھٹی مل گئی، رانا ثنا کی عمران خان کو وارننگ

وفاقی وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو خبردار کیا ہے کہ ضمنی انتخابات میں کامیابی کا مطلب یہ نہیں کہ آپ کو کھلی چھٹی مل گئی۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرداخلہ نے کہا ہم نے حکومت گرانے کیلئے جتھہ کلچرنہیں اپنایا۔ جتھہ کلچر کا آغاز عمران خان کریں گے تو ختم ہم کریں گے، اگر انہوں نے جتھہ کلچرکیا تو پھر الیکشن کی نہیں جتھے کی تیاری ہوگی، 7،8 ماہ بعد پھر آپ کو بھی جتھے کی تیاری کرنی ہوگی، عمران خان نے اسلام آباد پر چڑھائی کی تو پوری طاقت سے روکیں گے، چیئرمین پی ٹی آئی ملک کو کسی حادثے سے دوچار کرسکتے ہیں۔

وزیرداخلہ نے کہا اگر آپ یہ راستہ کھولیں گےتوبھول جائیں کہ صرف اس راستے پرآپ کو چلنا آتا ہے، ہم پارلیمنٹ اور آئین کا تحفظ کریں گے، اسلام آباد پر چڑھائی کی تو منہ توڑ جواب دیاجائے گا، ہمیں کوئی ابہام نہیں کہ ہم نے آپ کے ساتھ کیا کرنا ہے، یہ جب بھی آئیں ان کو آٹے دال کا بھاؤ پتہ چل جائے گا، یہ تباہی، فتنہ اور فساد ہے، پوری قوم کو میرے ساتھ کھڑے ہوکراس کوروکنا چاہیے۔

وزیرداخلہ نے کہا اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ میں یہ حرکتیں کرکے اقتدارمیں آجاؤں گا تو پھرراوی چین ہی چین لکھے گا، تو پھر ایسانہیں ہوگا آپ کے ساتھ بھی یہی ہوگا۔

رانا ثنا اللہ نے کہا شہبازشریف نے پارلیمنٹ میں پی ٹی آئی کواس وقت بھی مذاکرات کی دعوت دی جب وہ گالیاں دے رہے تھے، ان لوگوں نے اپنے ڈاکے کا کبھی حساب ہی نہیں دیا، جوبندہ ان کا ساتھ نہ ان کو ووٹ نہ دوے وہ چور ہے۔

وفاقی وزیرداخلہ رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ کل ہونیوالے ضمنی الیکشن آزادانہ اور شفاف ہوئے، یہ الیکشن دوسری بار عمران خان کے جھوٹے ہونے کا ثبوت ہے، یہ ثبوت ہے تمام ادارے آئینی حدودمیں رہ کر ذمہ داریاں ادا کررہے ہیں۔

رانا ثنا اللہ نے کہا عمران خان چیف الیکشن کمشنرکیخلاف گھٹیااورہتک آمیزپراپیگنڈہ کرتے ہیں، کل کے انتخابات پرکسی قسم کا بے ضابطگی کا الزام نہیں لگایا جاسکتا، ووٹ کوعزت دینےسے مراد یہی ہے کہ ووٹ کے فیصلے کو تسلیم کیا جائے، ووٹ کے فیصلے کو تبدیل نہ کیا جائے۔

وزیرداخلہ راناثناءاللہ نے کہا ضمنی الیکشن میں پی ٹی آئی نے 5 لاکھ 45 ہزار ووٹ حاصل کیے، پی ڈی ایم کے امیدواروں نے 4 لاکھ 75 ہزارووٹ حاصل کیے، عمران خان کو4لاکھ75ہزارووٹرزکا بھی احترام کرنا ہوگا۔

وزیر داخلہ نے کہا ہم بھی چاہتے تو آر ٹی ایس بیٹھ سکتا تھا، ہم اس فتنے فساد کو روکنے کیلئے ہر قسم کی قربانی دیں گے، جنہوں نے ہمیں ووٹ دیاہےمیں ان لوگوں کاشکرگزارہوں، بل تو ان لوگوں کوبھی آئےتھے،مہنگائی پر ان لوگوں نےبھی اثر کیا تھا، جنھوں نےہمیں ووٹ نہیں دیا میں ان کے فیصلےکو سراہتاہوں، اگلے2،3مہینوں میں لوگوں کو ریلیف دیں گے اور ان کیلئےآسانی پیداکریں گے۔

رانا ثنا اللہ نے کہا عام انتخابات میں عمران خان کوصوبائی حکومتوں کی حمایت حاصل نہیں ہوگی، عمران خان کوووٹ یوٹیلیٹی بلوں کی وجہ سے بھی ملے ہیں، ہم نےمشکل فیصلے کرکے پاکستان کی معیشت کودیوالیہ ہونےسے بچایا ہے۔

راناء ثنا اللہ نے کہا ہم نے مشکل فیصلے دل پر پتھر رکھ کر کیے جس سے مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے، ہم نے ریاست کو اپنی سیاست پر ترجیح دی ہے، ہم آئندہ دنوں میں مہنگائی پر قابو پالیں گے، عمران خان کےدورمیں مہنگائی ہورہی تھی تو تمام ضمنی الیکشن ہم جیت رہےتھے، ہم نے عمران خان کی حکومت آئینی طریقےسےختم کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں