ملکہ الزبتھ دوم کی آخری رسومات کب اور کیسے ادا ہوں گی؟

ملکہ الزبتھ دوم کی وفات سے برطانوی تاریخ کے طویل ترین دورِ حکمرانی کا خاتمہ ہو گیا، برطانیہ اور پوری دنیا سے انھیں خراج عقیدت پیش کیا جا رہا ہے۔ پڑھیئے کہ آنے والے دنوں میں ان کے آخری دیدار اور تدفین کے متعلق کیا کچھ متوقع ہے۔

ملکہ الزبتھ دوم کی وفات سے برطانوی تاریخ کے طویل ترین دورِ حکمرانی کا خاتمہ ہو گیا ہے۔ ان کی موت پرسکون انداز میں بیلمورل کاسل سکاٹ لینڈ میں اپنے اہلخانہ کے درمیان ہوئی۔

اب جبکہ ملکہ کی وفات پر انھیں خراج عقیدت پیش کیا جا رہا ہے، ایسے میں دیکھتے ہیں کہ آنے والے دنوں میں ان کے آخری دیدار اور تدفین کے متعلق کیا کچھ متوقع ہے۔

ملکہ کا آخری دیدار

سکاٹ لینڈ سے لندن واپسی کے بعد ملکہ کی میت کو آخری رسومات سے قبل ویسٹ منسٹر ہال میں تقریباً چار روز کے لیے آخری دیدار کے لیے رکھا جائے گا اور عوام کو ان کا دیدار کرنے کی اجازت ہو گی۔

یہ عظیم الشان ہال پیلس آف ویسٹ منسٹر کا قدیم ترین حصہ ہے اور حکومتِ برطانیہ کا مرکز ہے۔

سنہ 2002 میں شاہی خاندان کی آخری شخصیت جن کی میت کو دیدار کے لیے اس ہال میں رکھا گیا تھا وہ ملکہ الزبتھ کی والدہ مادر ملکہ تھیں۔ اُن کا آخری دیدار کرنے کے لیے دو لاکھ سے زیادہ افراد قطار میں کھڑے ہوئے تھے۔

ملکہ کی میت کو 11ویں صدی میں تعمیر کیے جانے والے ہال کی قرون وسطیٰ کی لکڑی کی چھت کے نیچے ایک بلند پلیٹ فارم پر رکھا جائے گا جسے ’کیٹفالک‘ کہا جاتا ہے۔ پلیٹ فارم کے ہر کونے کی حفاظت ان یونٹس کے سپاہی کریں گے جو شاہی خاندان کی خدمت کرتے ہیں۔

دیدار کے بعد اُن کی میت کو بکنگھم پیلس سے ایک جلوس کی صورت میں ویسٹ منسٹر ہال لایا جائے گا۔ یہ جلوس آہستہ آہستہ آگے بڑھے گا اور میت کے ہمراہ فوجی پریڈ اور شاہی خاندان کے افراد بھی ہوں گے۔

لوگ اس جلوس کو سڑکوں سے گزرتے ہوئے بھی دیکھ سکیں گے اور لندن کے واقع رائل پارکس میں آخری رسومات کی یہ تقریبات بڑی سکرینوں پر دکھائے جانے کا امکان ہے۔

شاہی اعزازات کے ساتھ ملکہ کی آخری رسومات متوقع طور پر ویسٹ منسٹر ایبی میں دو ہفتوں سے کم عرصے میں ادا کی جائیں گی، اس بارے میں حتمی تاریخ کا اعلان بکنگھم پیلس کی جانب سے کیا جائے گا۔

ویسٹ منسٹر ایبی وہ تاریخ کلیسا ہے جہاں برطانیہ کے بادشاہوں اور ملکاؤں کی تاج پوشی کی جاتی ہے۔

یہاں پر ملکہ الزبتھ دوم کی سنہ 1953 میں تاج پوشی کی گئی تھی اور سنہ 1947 میں ان کی شہزادہ فلپ کے ساتھ شادی کی تقریب بھی یہیں منعقد ہوئی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں